میں عاشق دیوانہ تیرا از اریج شاہ

0
امی جان بس چند دنوں کی بات ہے میں جلدی واپس آنے کی کوشش کروں گا پلیز اس طرح سے روئے تو نہیں ۔زاوق ان کو روتے دیکھ کر ان کے قریب آ کر بیٹھا
تو میں کیا کروں تم ہی بتاؤ تم جاتے ہو واپس آنے کا نام نہیں لیتے نہ جانے کون سا کام کرتے ہو تم اللہ غرق کرے ایسے کاموں کو جو اولاد کو اپنے والدین سے دور کر دے عائشہ بیگم بددعائیں دیتے ہوئے بولی تو زاوق بے اختیار مسکرا دیا
اب تُو ہنسنا بند کر دے تیرا ہنسنا مجھے مزید غصہ دلا رہا ہے عائشہ بیگم اس کے قریب سے اٹھتے ہوئے بولیں تو زاوق نے ان کا ہاتھ تھام کر واپس اپنے قریب بیٹھا لیا ۔
ویسے اگر آپ چاہتی ہیں میں ہمیشہ کے لئے واپس آ جاؤں تو آپ اپنی بہو کو میرے کمرے کا راستہ دکھا دیں میں خود ہی ہمیشہ کے لئے واپس آ جاؤں گا پھر تو آپ مجھے زبردستی بھی بھیجیں گی تو میں جاؤں گا نہیں زاوق شرارت سے مسکراتے ہوئے بولا
ہائے میں صدقے میں تو اس دن کا انتظار کر رہی ہوں کہ کب احساس کو تیری دلہن بنا کر تیرے کمرے میں بیٹھاکر جاؤں بس ایک بار رحمان مان جائیں تو ان شاءاللہ ایک دن نہیں لگاؤں گی
وہ تو تیری ہی امانت ہے تیرے ہی نام پر بیٹھی ہے بس ایک بار رحمان مان جائیں اس شادی کے لیے عائشہ نے اداسی سے کہا

 

Leave A Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Novels

Signup for Novels and get notified when we publish new Novel for free!




%d bloggers like this: