Aurat Baraye Farokht Novel By Sama Chaudhary

0
جون جولائی کے گرم دن، عین سر پر چمکتا سورج ہر کسی کو گھروں میں باندھے ہوئے تھا پر وہ بائیس برس کا نوجوان جمالی محلے کی نکڑ میں بنے اونچے چوبارے پر موٹر سے لگائی مشین کو دھواں دھار رفتار سے بھاگا رہا تھا، نا کسی گرمی کا احساس نا سر پر کوئی سائبان، یہ جمالی محلے کی مصروف ترین نکڑ تھی، خرید و فروخت کی دوکانیں اور حسن و نکھار کا سامان بھی اسی نکڑ پر پایا جاتا۔
جمالی محلہ اپنی رنگین آب و تاب سے ہر زبان کی زینت ہوتا، یہاں کے قصے کہانیاں گویا ہر کوچہ میں بڑی رفت و ادا سے بتائی جاتی

Aurat Baraye Farokht Novel By Sama Chaudhary

عورت برائے فروخت از رائٹر سماء چوہدری

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: